عمران خان کے بعد چیف جسٹس بھی عثمان بزدار کے متعرف نکلے

سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں بچوں کے جگر اور گردوں کی پیوندکاری کا اسپتال نہ ہونے کے خلاف از خود نوٹس کی سماعت ہوئی.


چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار نے کہا کہ آج بدقسمتی ہے کہ پاکستان میں آج تک بچوں کے جگر اور گردوں کے پیوندکاری کی کوئی علاج گاہ نہیں ہے.

سابق حکومتوں نے ایسے بچوں کا علاج کرنے کی بجائے اورنج لائن میٹرو کو ترجیح دی۔

چیف جسٹس نے کہا کہ اگر محکمہ صحت کے پاس کوئی پلان نہیں ہے تو پھر وزیر اعلیٰ پنجاب کو طلب کر لیتے ہیں۔

چیف جسٹس نےعثمان بزدار کے بارے میں کہا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب سیدھے اور اچھے آدمی ہیں ان کی راہنمائی کی ضرورت ہیں۔وہ یہاں بیٹھے رہیں گے۔

وزیر اعلیٰ عثمان بزدار کے بارے میں اکثر کہا جاتا ہے کہ وہ اتنا بڑا صوبہ سنبھالنے کے اہل نہیں ہیں کیونکہ ان میں خود اعتمادی کی کمی ہے۔

تاہم دوسری طرف لوگوں کی یہ بھی رائے ہے کہ عثمان بزدار بہت سادہ طبیعت کے آدمی ہیں وہ سب کے ساتھ گھل مل جاتے ہیں۔اور وزیر اعلیٰ بننے کے بعد بھی ان کی یہی عادت ہے اور ان کی طبیعت میں کوئی بدلاؤ یا غرور نہیں آیا۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎