پی ٹی آئی رہنما علیم خان کی قسمت کا فیصلہ ہوگیا،عدالت نے صوبائی وزیر کیخلاف نااہلی کی درخواست پراپنا فیصلہ سنادیا

لاہور ہائیکورٹ نے سینئر صوبائی وزیر اور پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء عبد العلیم خان کے خلاف نااہلی کی درخواست کو مسترد کر دیا ہے


 لاہور ہائی کورٹ میں لیگی امیدوار رانا احسن کی جانب سے درخواست دائر کی گئی تھی کہ تحریک انصاف کے سینئر رہنما عبد العلیم خان آئین کے آرٹیکل 62،63 پر پورے نہیں اترتے.

لہٰذا انہیں نا اہل قرار دیا جائے، جس پر لاہور ہائیکورٹ نے دو روزقبل فیصلہ محفوظ کر لیا تھا اور آج سنا دیا ہے۔ عدالت کی جانب سے انتخابی غداری کی درخواست کوناقابل سماعت قرار دیتے ہوئے مسترد کیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ لاہور ہائی کورٹ میں لیگی امیدوار رانا احسن کی جانب سے درخواست دائر کی گئی تھی کہ تحریک انصاف کے سینئر رہنما عبد العلیم خان آئین کے آرٹیکل 62،63 پر پورے نہیں اترتے لہٰذا انہیں نا اہل قرار دیا جائے۔ دوروز قبل لاہور ہائیکورٹ کے فاضل جج جسٹس چوہدری اقبال نے درخواست پر سماعت کی تھی اور سماعت کے بعد فیصلہ محفوظ کیا تھا ۔

پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء عبد العلیم خان کی جانب سے عدالت میں انکے وکیل نے مؤقف اختیار کیا تھا کہ عبد العلیم خان نے کاغذات نامزدگی میں تمام حقائق ظاہر کیے تھے علیم خان پر کسی قسم کا مقدمہ نہیں ہے اور نہ ہی انکی جانب سے آئین اور قانون کی خلاف ورزی کی گئی ہے ، انکے خلاف پٹیشن سیاسی انتقامی کاروائی ہے ،لہٰذا معزز عدالت سے استدعا ہے کہ پٹیشن کو خارج کیا جائے ۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎