عدالت نے نوازشریف کی سزا معطلی اور ضمانت کی درخواستوں پرمختصر فیصلہ سنا دیا

چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ جسٹس اطہر من اللہ اور جسٹس عامر فاروق پر مشتمل ڈویژنل بینچ نے نوازشریف کی درخواست پر محفوظ فیصلہ سنا دیا ہے جس کے مطابق نوازشریف کی سزا معطلی اور ضمانت کی درخواست اپیل کے ساتھ سنی جائے گی.


عدالتی فیصلے میں کہا گیا کہ اپیلوں کی سماعت سے پہلے سزا معطلی کی درخواست نہیں سنی جاسکتی، موسم سرما کی تعطیلات کے باعث اپیلوں پر فوری سماعت نہیں ہوسکتی۔

گزشتہ روز لاہور ہائیکورٹ کے بینچ نے فیصلہ محفوظ کیا تھا تاہم اپیل کی سماعت کی تاریخ مقررنہیں۔مختصر حکم نامے پرجسٹس اطہرمن اللہ اور جستس عامر فاروق کے دستخط موجود ہیں۔ہائیکورٹ کے جاری کردہ حکم نامے پر خواجہ حارث کی حاضری لگا دی گئی۔

احتساب عدالت نے نواز شریف کو العزیزیہ ریفرنس میں 7 سال قید کی سزا سنائی تھی، نواز شریف نے سزا کے خلاف اپیل کے ساتھ سزا معطلی کی درخواست بھی دائر کر رکھی ہے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎