اب کوئی توسیع نہیں۔۔غیر رجسٹرڈ موبائل فون بند کرنے کا فیصلہ! تاریخ کا اعلان کردیا گیا

15فروری کے بعد تمام غیر رجسٹرڈ موبائل فونز بند ہوجائیں گے.


وفاقی وزیر مملکت برائے ریونیو حماد اظہر کہتے ہیں کہ 15فروری کے بعد تمام غیر رجسٹرڈ موبائل فونز بند ہوجائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق ملک بھر میں غیراستعمال شدہ، چوری اور اسمگل شدہ موبائل فونز اور انٹرنیٹ ڈیوائسز مقررہ ڈیڈ لائن 15 جنوری کے بعد بند ہوگئیں تھیں تاہم اب میڈیا رپورٹس کے مطابق حماد اظہرکا میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ آنے والے دنوں میں ملک کو اسمگلنگ فری ملک بنانے کے حوالے سے اقدامات کیے ہیں،منی بجٹ اصلاحات کے لیے لایا گیا ہے،۔

بجٹ اصلاحات سے لوگوں کو ریلیف ملے گا۔اس میں کوئی نیا ٹیکس عائد نہیں کیا گیا ہے۔اس سے نئی نوکریاں پیدا ہوں گی۔وزیر مملکت کا مزید کہنا تھا کہ موبائل فون رجسٹریشن میں کوئی توسیع نہیں کی جا رہی۔

15 فروری کے فوری بعد تمام غیر رجسٹرڈ موبائل فونز بلاک کر دئیے جائیں گے۔ایف اے ٹی گرے لسٹ سے جلد نکل جائیں گے۔یاد رہے کہ اکتوبر میں پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی (پی ٹی اے) نے موبائل صارفین کو خبردار کیا تھا کہ جن موبائل فونز کے آئی ایم آئی نمبرز رجسٹرڈ نہیں ہیں، انہیں 20 اکتوبر تک بند کردیا جائے گا تاہم عوامی دباؤ کے باعث اس ڈیڈ لائن میں 31 دسمبر اور پھر 15 جنوری تک توسیع کی گئی۔

پی ٹی اے حکام کے مطابق ڈیڈ لائن کے بعد موبائل رجسٹریشن پر دس فیصد جرمانہ ہوگا۔ پی ٹی اے کے ترجمان کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ اب سے ہر وہ فون جو چوری کیا جائے گا اور اس کی رپورٹ پی ٹی اے کو کی جائے گی، وہ فوری بند کر دیا جائے گا، یا پی ٹی اے اس کا سراغ لگا کر موبائل فون کے اصل مالک تک پہنچانے کا کہے گا۔ پی ٹی اے نے اس حوالے سے باقاعدہ نظام وضع کر لیا ہے۔ پی ٹی اے کے مطابق اب کوئی مسافر بیرون ملک سے کوئی موبائل فون لاتا ہے تو وہ ایئرپورٹ پر ٹیکس کی ادائیگی کے بعد پاکستانی حدود کے اندر اسے قابل استعمال بنا سکتا ہے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎