حکومت کی ایک اور ناکامی ہمسایہ ملک چین کی بڑی پیشکش ٹھکرا دی

 پنجاب حکومت نے چین کی ایک بڑی پیشکش ٹُھکرا دی ہے.


چین کے ایشین انفراسٹرکچر بینک نے ویسٹ واٹر منصوبے کے لیے انتہائی آسان شرائط پر 40 ارب کا قرض دینے پر آمادگی  کا اظہار کیا تھا اور منصوبے کی سٹڈی کے لئے 7 لاکھ ڈالر مفت گرانٹ دینے کی پیشکش بھی کی تھی.

اس سلسلے میں واسا اور ایشین انفراسٹرکچر بینک کے درمیان مفاہمتی یاد داشت پر دستخط بھی ہوۓ تھے اور رواں ماہ قرضے کے معاہدے پر بھی دستخط کئے جانے تھے.

یہی نہیں اس حوالے سے واسا حکام کی جانب سے اس منصوبے پر عالمی بینک کے قرض سے تعمیر کی پریزنٹیشن بھی دی گئی تھی.

لیکن بعد میں پنجاب حکومت نے پانی کے ذخائر بڑھانے کے لیے واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹ کے بجائے ٹنل بورنگ ٹیکنالوجی اور سرفیس واٹر منصوبے پر کام کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا.

ایم ڈی واسا نے سرفیس واٹر منصوبے میں سرمایہ کاری کے لئے بھی ایشین انفراسٹرکچر بینک کو مائل کرنے کی کوشش کی ہے لیکن ایشین انفراسٹرکچر بینک نے مذاکرات میں ویسٹ واٹر منصوبہ شامل نہ کرنے پر ناراضی کا اظہار بھی کیا، چین کی پیشکش ٹُھکرانے پر پنجاب حکومت کو آسان شرط پر ملنے والے قرض سے بھی ہاتھ دھونا پڑ سکتا ہے.



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎