عمران خان سرکاری ملازمین پرمہربان، سرکاری ملازمین کواب تک کی سب سے بڑی سہولت دیدی گئی

وفاقی ملازمین کو دوران ملازمت دو کی بجائے تین بار ہائوس بلڈنگ ایڈوانس لینے کا حقدار ٹھہرا دیا۔


وفاقی حکومت نے وفاقی ملازمین کو اپنی چھت فراہم کرنے کے لیے 3 مرتبہ ہاؤس بلڈنگ ایڈوانس لینے کا حقدار قرار دے دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت کی جانب سے ہاؤس بلڈنگ ایڈوانس کے حوالے سے ایک اہم پیش رفت کی گئی

اس فیصلے سے وفاقی ملازمین میں خوشی کی لہر دوڑ گئی اور ملازمین کی جانب سے اسے حکومت کا اہم اقدام قرار دیا جا رہا ہے

وفاقی وزیر خزانہ کی ہدایات کی روشنی میں ریگولیشن ونگ وزارت خزانہ کی ڈپٹی سیکرٹری (آر ۔III) سیدہ کلثوم حئی نے نوٹیفیکیشن جاری کر دیا ۔ نئے طریقہ کار کے مطابق تیسری بار صرف وہی ملازمین قرض حاصل کرنے کے حقدار ہیں جنہوں نے سابقہ لیا گیا قرض حکومت کو واپس کر دیا ہو گا۔ نئے قانون کے مطابق ملازمین پہلی بار 70 فی صد، دوسری مرتبہ 20 فی صد جبکہ تیسری مرتبہ 10 فی صد ہاؤس بلڈنگ فنانس سے قرض حاصل کر سکتے ہیں۔

اس حوالے سے سینیٹر خانزادہ خان نے کہا کہ مہنگائی میں اضافہ ہوا، لہٰذا سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ کیا جائے۔ کمیٹی رکن عائشہ رضا نے کہا کہ سرمایہ داروں کے لیے بجٹ میں ریلیف ہے لیکن ملازمین کے لیے نہیں ہے تاہم وزارت خزانہ نے تنخواہ میں اضافے کی تجویز کی مخالفت کی۔ جس کے باعث تاحال اس حوالے سے کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎