آئی ایم ایف سے قرض لینے کی ضرورت نہیں، حکومت نے مالی بحران سے نکلنے کا متبادل حل نکال لیا

 وزیر خزانہ اسد عمر نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف کے پاس جائے بغیر بھی پاکستان اپنے مالی بحران پر قابو پاسکتا ہے اور آئی ایم ایف سے قرض کے لئے رجوع کئے بغیر بھی اپنی معیشت کو بہتر بناسکتا ہے۔


 وزیر خزانہ اسد عمر کا کہنا تھا کہ معاشی ترقی کے لیے اہم فیصلے کر رہے ہیں، ادائیگیوں اور زرمبادلہ کے ذخائر کے درمیان گیپ پورا کر لیا گیا ہے۔

خزانہ اسد عمر کا کہنا ہے کہ پاکستان نے تجارتی خسارے پر قابو پا لیا ہے، تمام تر انحصار آئی ایم ایف پر نہیں کر رہے، اگر آئی ایم ایف پیکج نہ ملا تو متبادل انتظام کر لیا ہے۔

انہوں نے ایک نجی نیوز چینل سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت سعودی عرب سے غیر مشروط اور کم ترین سود کی شرح 3 فی صد پر مالیاتی پیکج حاصل کر رہی ہے۔

وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے ایک  سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ دسمبر میں ملک کی برآمدات کے حجم میں بہت زیادہ اضافہ ہوا ہے، تاہم پاکستان کے دسمبر میں زرمبادلہ کے ذخائر 7.2 ارب ڈالر رہے جوہمارے غیر ملکی قرضوں کی ادائیگی کے لئے کافی نہیں ہیں ۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎