پی ایس ایل کے گزشتہ دو سالوں میں کس ٹیم کو کتنا نقصان اٹھانا پڑا؟

پی ایس ایل کو2016 اور 2017 میں 20 کروڑ سے 70 کروڑ روپے تک کا نقصان اٹھانا پڑا ہے۔


نجی نیوز میڈیا کے مطابق پی ایس ایل فرنچائزز کو دو سالوں کے دوران آپریشن اور ٹیکس کی مد میں کروڑوں روپے دینے پڑرہے ہیں.

سب سے کم قیمت پر فروخت ہونے والی کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو ابتدائی دو سیزنز میں تقریباً 11 کروڑ کے گھاٹے کا سامنا کرنا پڑا۔

 فرنچائز کراچی کنگز نے ابتدائی دو سیزنز میں 18 کروڑ گنوادیے جبکہ دو مرتبہ پی ایس ایل چیمپین فرنچائز اسلام آباد یونائٹیڈ کو 42 کروڑ کے نقصان بھگتنا پڑا۔

2017 میں پی ایس ایل ٹائٹل جیتنے والی پشاور زلمی نے 26 کروڑ کے لگ بھگ نقصان اٹھایا۔

فرنچائز لاہور قلندرز کو سب سے زیادہ 73 کروڑ روپے کا نقصان اٹھانا پڑا۔

2017 میں پی ایس ایل ٹائٹل جیتنے والی پشاور زلمی نے 26 کروڑ کے لگ بھگ نقصان اٹھایا۔فرنچائز مالکین نے ڈالر کے ریٹ بڑھنے کو مالی نقصان کی بڑی وجہ قرار دیا جبکہ پی ایس ایل کا پاکستان سے باہر ہونا بھی لیگ فرنچائزس کومالی نقصان سے دوچار کررہا ہے۔اگر مالی خسارہ کم نہ ہوا تو فرنچائزز پی ایس ایل سے کنارہ کشی پر غور کرسکتے ہیں۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎