حکومت کی عوام سے چالاکی پٹرول 4 روپے سستا کرنے کے بعد جانتے ہیں سیلز ٹیکس میں کتنے فیصد اضافہ کردیا

پی ٹی آئی کی حکومت آئی مگر تبدیلی پھر بھی نہ آئی، موجودہ حکومت بھی ماضی کی تمام حکومتوں کے ڈگر پر ہی چل پڑی۔ آمدنی بڑھانے کے چکر میں حکومت نے پیٹرولیم مصنوعات پر عائد سیلز ٹیکس میں اضافہ کر دیا اور اب پیٹرول، ڈیزل، لائٹ ڈیزل اور مٹی کے تیل پر سیلز ٹیکس 17 فیصد وصول کیا جا رہا ہے

حکومت نے پیٹرول پر عائد سیلز ٹیکس میں 9 فیصد اضافہ کر دیا، جس کے باعث عوام کو فی لیٹر پیٹرول پر ملنے والا 9 روپے سے زائد کا ریلف اب صرف 4 روپے 86 پیسے تک محدود رہا، ڈیزل پر عائد سیلز ٹیکس میں 4 فیصد اضافہ کیا گیا.


کاشتکاروں کے استعمال میں آنے والے لائٹ ڈیزل پر سیلز ٹیکس کی شرح ساڑھے 16 فیصد تک بڑھا دی گئی۔

اس کے علاوہ غریب عوام کے استعمال میں آنے والے مٹی کے تیل پر سیلز ٹیکس کی شرح 2 فیصد سے بڑھا کر17 فیصد کر دی گئی۔

ماہرین کے مطابق جب عوام ٹیکس نہیں دیں گے تو حکومت کو معیشت کا پہیہ چلانے کی خاطر اسی قسم کے اقدامات نہ چاہتے ہوئے بھی کرنے ہی پڑیں گے۔

یہ بھی یاد رہے کہ اوگرا نے بھی سمری بھیج کر سفارش کی تھی کہ یکم جنوری سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 10 سے 15 روپے فی لیٹر تک کمی کی جائے۔ لیکن وفاقی حکومت نے اوگرا کی سمری پر غور کرنے کے بعد پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں صرف چار روپے 86 پیسے ہی کمی کی.



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎