محکمہ ایکسائز سندھ نے چھ ماہ میں کتنا ٹیکس وصول کیا؟

محکمہ ایکسائز سندھ نے چھ ماہ میں36482 ملین روپے ٹیکس وصول کرلیا۔


صوبائی وزیر برائے ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسدادِ منشیات اور پارلیمانی امور مکیش کمار چاولہ نے کہا کہ محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسدادِ منشیات نے رواں مالی سال کے دوران جولائی 2018 سے دسمبر 2018 تک متعدد ٹیکسز کی مد میں مجموعی طور 36482 اعشاریہ 454ملین روپے ٹیکسز وصول کئے جبکہ گزشتہ مالی سال کے دوران اسی مدت کے دوران 30003اعشاریہ 738ملین روپے وصول کئے تھے۔

یہ بات آج انہوں نے اپنے دفتر میں منعقد ہونے والے ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔ اجلاس میں سیکریٹری ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسدادِ منشیات عبد الرحیم شیخ , ڈائریکٹر جنرل شبیر احمد شیخ اور دیگر ڈائریکٹرز نے بھی شرکت کی۔

اجلاس کو بریفننگ دیتے ہوئے ڈائریکٹر جنرل ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن شبیر احمد شیخ نے بتایا کہ موٹر وہیکل ٹیکس کی مد میں مجموعی طور پر 3542 اعشاریہ 790 ملین روپے وصول کئے جبکہ انفراسٹرکچر سیس کی مد میں 28579 اعشاریہ 517ملین روپے اور پروفیشنل ٹیکس کی مد میں247اعشاریہ 384 ملین روپے وصول کئے گئے۔

انہوں نے مذید کہا کہ کاٹن فیس کی مد میں146 اعشاریہ 496ملین روپے , جائیداد ٹیکس کی مد میں 1375 اعشاریہ 132 ملین روپے اور انٹرٹینمنٹ ڈیوٹی کی مد میں 32 اعشاریہ39 ملین روپے وصول کئے گئے جبکہ دیگر رقم دیگر ٹیکسز کی مد میں وصول کی گئی۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر برائے ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن و انسدادِ منشیات اور پارلیمانی امور مکیش کمار چاولہ نے ٹیکسز کی وصولی کی مجموعی صورتحال پر اپنے اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے افسران کو ہدایت کی کہ وہ اپنے فرائض بہتر انداز سے انجام دیں اور جائیداد ٹیکس کی وصولی کی شرح میں مذید بہتری لائیں۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎

مقبول ٹیگ‎‎‎