سانحہ ساہیوال میں مارے جانے والا ذیشان دہشت گرد ہے یا نہیں، اب تک کی سب سے بڑی پیش رفت

میڈیا رپورٹ کے مطابق انٹیلی جنس ذرائع کا دعویٰ ہے کہ ذیشان کے موبائل فون سے دہشت گرد عثمان کیساتھ تصویر ملی ہے.


عثمان 15 جنوری کوفیصل آباد سی ٹی ڈی کیساتھ مقابلے میں مارا گیا تھا۔

 انٹلیجنس ذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ سانحہ ساہیوال کے مقتول ڈرائیور ذیشان کے دہشت گردوں سے رابطے کے شواہد مل گئے ہیں۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق انٹیلی جنس ذرائع کا دعویٰ ہے کہ ذیشان کے موبائل فون سے دہشت گرد عثمان کیساتھ تصویر ملی ہے.

انٹیلی جنس ذرائع کے مطابق ذیشان کے زیر استعمال گاڑی عدیل حفیظ نے خریدی تھی جس کا اسٹامپ پیپر بھی منظر عام پر آگیا ہے۔ انٹیلی جنس ذرائع نے بتایا کہ عدیل حفیظ بھی عثمان کیساتھ 15 جنوری کو فیصل آباد مقابلے میں مارا گیا تھا۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎