لوہے کے چنے پھل مخانے ہو گئے، خواجہ سعد رفیق حکومتی بنچز پر آکر بیٹھ گئے

ایسا لگ رہا تھا کہ سعد رفیق نے کوئی خاص پیغام مراد سعید کو دینے کی کوشش کی ہے۔


گذشتہ روز جب وفاقی وزیر مراد سعید نے قومی اسمبلی میں دھواں دار تقریر کی تو اپوزیشن نے شدید احتجاج کیا تاہم ان کی تقریر ختم ہوتے ہی خواجہ سعد رفیق حکومتی بنچز کے پاس آ کر بیٹھ گئے اور سیٹھ کا رخ مراد سعید کی جانب موڑ کر ان سے باتیں کرنے لگ گئے۔

مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ سعد رفیق قومی اسمبلی میں دھواں دار تقریر کرنے والے مراد سعید کے پاس جا پہنچے اور ان کے سامنے والی نشست پر بیٹھ گئے۔

دونوں رہنما خوش گپیوں میں مصروف رہے ایسا لگ رہا تھا کہ سعد رفیق نے کوئی خاص پیغام مراد سعید کو دینے کی کوشش کی ہے۔

واضح رہے گذشتہ روز مراد سعید کی دھواں دار تقریر نے اپوزیشن کو احتجاج پر مجبور کر دیا۔

فاقی وزیر مراد سعید کا قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ان کا لیڈرآج کرپشن الزام ثابت ہونےپرکوٹ لکھپت جیل میں بندہے۔ ان کا وزیر اعظم باہر جاتا تھا تو قطری خطوط لاتا تھا جبکہ ہمارا منتخب وزیراعظم باہرجاتاہےتو پاکستانیوں سےخطاب کرتا ہے۔سانحہ ماڈل ٹاؤن کے ذمے دار شہبازشریف اور رانا ثنااللہ تھے۔انہوں نے پیپلز پارٹی کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ آصف زرداری کہتے تھے میں سیاست سکھاؤں گا۔آصف زرداریبلاول کو سیاست سکھا دیں ہمیں معاف کر دیں۔اس اپوزیشن نے ہنگامہ برپا کر دیا۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎