پی ٹی آئی رہنما سیاسی حریف ضرور ہیں پر۔۔۔ خواجہ سعد رفیق تحریک انصاف کے رہنما کے حق میں بول پڑے

پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما سعد رفیق نے حوالات کے ماحول سے متعلق انکشافات کرتے ہوۓ بتایا کہ نیب نے مجھ پر علیم خان سے متعلق بیان دینے پر دباؤ ڈالا پر میں نے کہا پی ٹی آئی رہنما سیاسی حریف ضرور ہیں پر ان کے خلاف ایک لفظ نہیں بولوں گا.


 ان لوگوں میں شامل ہوں جو نہیں چاہتا کہ اب پی ٹی آئی کی شامت آئے کیونکہ اب ان کی باری ہے، ہم کسی کو سلاخوں کے پیچھے دیکھنا نہیں چاہتے۔سابق وزیر ریلوے نے انکشاف کیا کہ دورانِ تفتیش ان سے پی ٹی آئی رہنما علیم خان کے بارے میں پوچھا گیا جس پر میں نے کہا کہ وہ ایک معقول آدمی ہیں.

 میں کوئی انفارمر نہیں ہوں، آئندہ مجھ سے سیاسی مخالف کے بارے میں پوچھنے کی جرات نہ کریں۔

یاد رہے کہ اس سے قبل بھی پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ سعد رفیق کا قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہنا تھا کہ نیب نے جسے میرے خلاف بڑی مشکل سے وعدہ معاف گواہ بنایا وہ بھی کچھ دستاویز پیش نہیں کر سکا.

انہوں نے کہا جو سچ ہے اس کا ذکر کروں گا،دوران حراست نیب کا رویہ میرے ساتھ معقول تھا۔نیب کالا قانون ہے۔ ،ْ یہ سیاسی وفاداریاں تبدیل کر انے کیلئے بنایا گیا ،ْ قانون کو بنانے والے کی بدنیتی عیاں تھی.

 سعد رفیق کا کہنا ہے کہ مجھے 8بائی 10 کے لاک اپ میں رکھا گیا ہے۔پہلے دن کچا انڈا اور ٹھندے سلائس دئیے گئے تھے.



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎