نواز شریف کی نا اہلی کے بعد عدلیہ مخالف نعرے لگانے والی لیگی خاتون کے کیس کا فیصلہ آگیا

اسلام آباد ہائیکورٹ نے عدلیہ مخالف نعرے کیس میں لیگی خواتین کی ضمانت منظور کر لی، عدالت نے ریمارکس دیئے ہیں کہ پہلا کیس ہے جس میں پولیس نے سائنٹیفک طریقے سے الزام ثابت کیا۔


تفصیلات کے مطابق اسلام آبادہائیکورٹ میں عدلیہ مخالف نعرے لگانے والی لیگی خواتین کی درخواست ضمانت کی سماعت ہوئی،لیگی کونسلر ثمینہ شعیب اور نورین گیلانی عدالت میں پیش ہوئیں۔

جسٹس محسن اختر کیانی نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ عجیب مذاق بنا گیا ہے جس کا جی چاہتا ہے گالیاں دیتا ہے،کچھ تو ایسے ہیں جو پاکستان کو بھی گالیاں دیتے ہیں،جسٹس محسن اختر کیانی نے کہا کہ ملک کیلئے کرتے کچھ نہیں بس گالیاں دیتے ہیں،یہ کیوں سپریم کورٹ سے متعلق نازیباالفاظ کہتی ہیں۔

جسٹس محسن اختر کیانی نے کہا کہ نوازشریف کی پیشی کے وقت یکجہتی کریں لیکن گالیاں نہ دیں ،پہلا کیس ہے جس میں پولیس نے سائٹیفک طریقے سے الزام ثابت کیا۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎