قومی ٹیم انتظامیہ نے امام الحق کو زور دار جھٹکا دیدیا

پاکستانی ٹیم انتظامیہ نے جنوبی افریقا کے خلاف ٹی ٹوئنٹی سیریز میں اوپنر اور چیف سلیکٹر انضمام الحق کے بھتیجے امام الحق کو شامل نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔


پی سی بی کی سلیکشن کمیٹی نے امام کی جگہ صاحبزادہ فرحان کو شامل کرنے کا فیصلہ کیا ہے.

امام الحق نے جنوبی افریقا کے خلاف پہلے ون ڈے میں 86 رنز کی اننگز کھیلی تھی لیکن سلیکٹرز امام الحق کو تین ٹی ٹوئنٹی میچوں میں آرام دے کر نوجوان صاحبزادہ فرحان کو کھلانا چاہتے ہیں۔

ذمے دار ذرائع کا کہنا ہے کہ جوہانسبرگ میں انضمام الحق کی سرفراز احمد اور مکی آرتھر سے میٹنگ میں امام الحق کو ون ڈے سیریز کے بعد وطن واپس بھیجنے کا فیصلہ کیا گیا۔

صاحبزادہ فرحان کے ساتھ ساتھ جارح مزاج مڈل آرڈر بلے باز آصف علی کو بھی ٹیم میں شامل کیا جائے گا۔

امام الحق نے پاکستان کی جانب سے دس ٹیسٹ اور 18 ون ڈے انٹرنیشنل کھیلے ہیں لیکن انہیں اپنے پہلے ٹی ٹوئنٹی میچ کا انتظار ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ فاسٹ بولر محمد عامر کی بھی ٹی ٹوئنٹی ٹیم میں واپسی ہو گی، عامر کو نوجوان بولر وقاص مقصود پر ترجیح دی جائے گی۔

ون ڈے سیریز کے بعد امام الحق، محمد رضوان، شان مسعود وطن واپس آ جائیں گے۔

پاکستان کی اننگز کا آغاز فخر زمان اور صاحبزادہ فرحان کریں گے جب کہ مڈل آرڈر میں بابر اعظم، شعیب ملک، محمد حفیظ، حسین طلعت، آصف علی اور سرفراز احمد ہوں گے۔

شاداب خان اور عماد وسیم آل راونڈرز ہوں گے جب کہ فاسٹ بولنگ کا شعبہ محمد عامر، حسن علی، فہیم اشرف، عثمان شنواری اور شاہین شاہ آفریدی پر مشتمل ہو گا۔

پاکستان اور جنوبی افریقا کے درمیان تین ٹی ٹوئنٹی میچوں پر مشتمل سیریز کے میچ یکم، 3 اور 6 فروری کو کھیلے جائیں گے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎