نوازشریف نے معافی مانگ لی

سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف نے گزشتہ روز اپنے گارڈ کی جانب سے نجی ٹی وی کے کیمرہ مین پر تشدد کرنے پر معذرت کی ہے۔


اسلام آباد کی احتساب عدالت میں نواز شریف کی آمد پر صحافیوں نے سماء ٹی وی کے کیمرہ مین واجد علی پر تشدد کے خلاف احتجاج کیا۔

سابق وزیر اعظم اسلام آباد بار کونسل کے دفتر پہنچے جہاں انہوں نے صحافیوں سے ملاقات کی اور گزشتہ روز پیش آنے والے واقعے پر معذرت کی۔

نواز شریف نے گزشتہ روز اپنے گارڈز کی جانب سے نجی ٹی وی چینل کے کیمرہ مین پر تشدد کے واقعے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے قانون کے مطابق کارروائی کرنے کی یقین دہانی کروائی۔

گزشتہ روز پیش آنے والے واقعے کی تفصیل بتاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ 'میں اسمبلی سے باہر آرہا تھا تو گارڈ شکور میرے آگے آگے تھا اور راستہ بنانے کے لیے لوگوں کو ہٹا رہا تھا، ہم گاڑی کے پاس آئے تو گارڈ شکور نے کیمرہ مین واجد علی کو بھی دھکا دیا، لیکن جس طرح گارڈ نے دھکا دیا، مجھے اس پر اعتراض تھا، کسی کو راستہ دینے کا یہ طریقہ نہیں ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ 'یہ حرکت گارڈز نے کی ہے تو بدنامی تو میری ہوئی ہے، میں کبھی نہیں چاہتا تھا کہ یہ لمحہ آتا اور مجھے شرمندگی اٹھانی پڑتی، نواز شریف نے اس واقعے کو 'حتمی نتیجے تک پہنچانے کی یقین دہانی کرواتے ہوئے کہا کہ 'میں محاسبہ بھی کروں گا اور ایکشن بھی لوں گا،قانون کے مطابق جو بھی کارروائی ہوگی ہم کریں گے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز سماء ٹی وی سے وابستہ کیمرہ مین واجد علی سابق وزیر اعم نواز شریف کی پارلیمنٹ سے روانگی کی فوٹیج بنا رہےتھے کہ ان کے گارڈ نے انہیں تشدد کا نشانہ بنایا، بعد میں بے ہوشی کی حالت میں کیمرہ میں واجد کو پمز اسپتال منتقل کیا گیا۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎