جیل میں قید نواز شریف کی طبیت بگڑگئی

کوٹ لکھ پت جیل میں نوازشریف کی طبیعت ناساز ہوگئی ، سابق وزیراعظم کو تیز بخار، سر اور جسم میں درد کی شکایت جبکہ نزلہ زکام اور گلا بھی خراب ہوگیا، ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان سے ملنے کی درخواست کردی۔


 ناساز طبیعت کا سن کر مریم نواز بیٹے کے ہمراہ کوٹ لکھپت جیل پہنچ گئیں، پچیس منٹ طویل ملاقات میں تیمارداری کی، دوائیں اور کھانا پہنچایا، ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان کہتے ہیں نوازشریف کو بخار اور نزلہ زکام ہوگیا ہے، جیل میں علاج سے مطمئن نہیں۔

نواز شریف سے ان کی صاحبزادی مریم نواز نے جیل میں ملاقات کی، 25 منٹ تک ہونے والی ملاقات میں مریم نواز کا بیٹا بھی موجود تھا، مریم نواز نے کھانا اور دوائیں والد کو پہنچائیں۔

ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان کا کہنا ہے کہ نوازشریف کے میڈیکل چیک اپ کے لیے جیل حکام سے اجازت مانگی لیکن کوئی جواب نہیں دیا گیا نواز شریف کے دل کا آپریشن ہوچکا ہے اور وہ جیل میں علاج سے مطمئن نہیں ہیں۔

جولائی 2018 میں اڈیالا جیل میں قید کے دوران بھی نواز شریف کی طبیعت خراب ہوئی تھی اور وہ کئی دن پمز میں زیرعلاج رہے تھے۔

سابق وزیراعظم نے سزا کے خلاف اسلام آباد ہائیکورٹ میں اپیل بھی دائر کی ہے جس کی سماعت کل ہوگی۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎