نوازشریف کی طبی بنیادوں پرضمانت کی درخواست پرعدالت سے بڑی خبرآگئی

نواز شریف کی سزا معطلی کی پہلی درخواست 18 فروری کو سماعت کیلئے مقرر ہے۔


سابق وزیراعظم نواز شریف نے طبی بنیاد پر سزا معطلی کی ایک اور درخواست اسلام آباد ہائی کورٹ میں دائر کر دی۔

درخواست کے متن میں طبی بنیاد پر سزا معطل کر کے ضمانت پر رہا کرنے کی استدعا کی گئی ہے اور موقف اختیار کیا گیا ہے کہ نوازشریف عارضہ قلب میں مبتلا ہیں۔

نوازشریف کی طبیعت ناساز، لاہور کے اسپتال میں طبی معائنہ

اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست کے ساتھ نواز شریف کی میڈیکل رپورٹس بھی جمع کرائی گئی ہیں جبکہ قومی احتساب بیورو (نیب)، احتساب عدالت اور سپرنٹنڈنٹ کوٹ لکھپت جیل کو فریق بنایا گیا ہے۔

نواز شریف کا 22 جنوری کو پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں طبی معائنہ ہوا جہاں ایکو، کارڈیو گرافی اور ای سی جی کی گئی۔ نوازشریف کی علالت پر شہباز شریف اور مریم نواز نے بھی تشویش ظاہر کرتے ہوئے فوری بہتر طبی سہولیات کا مطالبہ کیا تھا۔

احتساب عدالت نے سابق وزیراعظم کو العزیزیہ ریفرنس میں 7 سال قید کی سزا سنائی تھی جبکہ فلیگ شپ ریفرنس میں باعزت بری کرنے کا حکم دیا تھا۔ انہوں نے عدالت سے اڈیالہ جیل راولپنڈی کے بجائے کوٹ لکھپت جیل لاہور منتقلی کی درخواست کی تھی۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎