اسلام آباد سے وہ خبر آ گئی جس کا نوازشریف بے صبری سے انتظار کر رہے تھے

اسلام آباد ہائیکورٹ رجسٹراربرانچ نے نوازشریف کی سزا کیخلاف درخواست سماعت کیلئے مقرر کر دی ہے ۔


نواز شریف کی جانب سے دائر العزیزیہ اسٹیل ریفرنس میں سزا کے خلاف اپیل کی سماعت 21 جنوری کو ہو گی ۔

اسلام آباد ہائی کورٹ میں نواز شریف نے 7سال قید اور جرمانوں کی سزا کے خلاف اپیل دائر کر رکھی ہے ، جبکہ اس اپیل کے ساتھ ہی ان کی سزا معطلی کی درخواست بھی سنی جائے گی۔

نواز شریف کی اپیل پر جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی پر مشتمل بینچ سماعت کرے گا۔

گزشتہ روز جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی پر مشتمل ڈویژن بینچ نے محمد نواز شریف کی درخواست پر مختصر سماعت کے بعد رجسٹرار آفس کو 10 دن میں اپیل سماعت کے لیے مقرر کرنے کے احکامات جاری کیے تھے۔

اس سے قبل سابق وزیراعظم کی جانب سے ہائیکورٹ میں متفرق درخواست دائر کی گئی تھی جس میں استدعا کی گئی تھی کہ العزیزیہ اسٹیل ملز ریفرنس میں سزا کے خلاف اپیل جلد سماعت کے لیے مقرر کی جائے۔

واضح رہے کہ احتساب عدالت نے 24 دسمبر کو العزیزیہ ریفرنس کا فیصلہ سناتے ہوئے نواز شریف کو 7 سال قید و جرمانے کی سزا سنائی تھی جس پر سابق وزیراعظم نے احتساب عدالت کے فیصلے کیخلاف پہلے یکم جنوری اور پھر 4 جنوری کو اسلام آباد ہائیکورٹ میں درخواست دائر کی، تاہم دونوں مرتبہ رجسٹرار آفس نے اعتراض لگا کر درخواست واپس کر دی تھی۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎