تبدیلی سرکار کی عوام پر ایک اور پابندی، اب ہر گھر میں عام استعمال کی اس چیز کا بھی لائسنس بنے گا

محکمہ انہار کسانوں کو ٹیوب ویل لگانے کے لیے لائسنس جاری کرے گا۔ 


لاہور سمیت صوبہ بھر میں پانی کے زیر زمین ذخائر کو کم ہونے سے روکنے کی خاطر حکومت پنجاب نے نئی حکمت عملی تشکیل دی ہے۔جس کے لیے ایک قانون وضع کیا جا رہا ہے

عوام تیار ہو جائیں، حکومت کی جانب سے اُن سے ایک نئی فیس وصول کرنے کی تیاریاں ہو رہی ہیں۔ 

جس کا اطلاق گھریلو صارفین پر بھی ہو گا۔تفصیلات کے مطابق پنجاب میں پانی کو ضائع ہونے سے روکنے کی خاطر حکومت نے گھریلو صارفین اور کسانوں کو بھی پانی کے استعمال پر لائسنس دینے کا واٹر ایکٹ تیار کر لیا ہے۔

مجوزہ بل میں شہری اور کسان موٹر پمپ اور ٹیوب ویل کی تنصیب سے پہلے اتھارٹی لائسنس لیں گے۔ واٹر ایکٹ ڈرافٹ کے مطابق شہریوں کو پانی کے حصول کے لیے نئے پمپ کی تنصیب سے قبل لائسنس لینا پڑے گا۔ اگر کوئی شہری بغیر لائسنس حاصل کیے موٹر یا ٹیوب ویل لگوائے گا تو اس کا کنکشن منقطع کر دیا جائے گا۔ مجوزہ بل کے مطابق کوئی بھی شہری گھر میں پانی کے حصول کے لیے موٹر لگانے کے لیے لائسنس حاصل کرنے کا پابند ہو گا۔بل کے مطابق واٹر رینکر اتھارٹی پانی کے لیے تنصیب کیے جانے والے پمپ کا لائسنس جاری کرے گی۔

اس پابندی کا دائرہ کار دیہاتوں تک بھی بڑھا دیا گیا ہے۔ پنجاب بھر میں کسانوں کے لیے بھی لائسنس کے بغیر ٹیوب ویل لگانے پر پابندی کی تجویز ایکٹ میں شامل کی گئی ہے۔ محکمہ انہار کسانوں کو ٹیوب ویل لگانے کے لیے لائسنس جاری کرے گا۔ پانی کی کمپنیوں کے لیے واٹر پالیسی کے مطابق بنایا گیا کمیشن لائسنس کے اجراء کا مجاز ہو۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎