انتہائی آفسوس ناک خبر، پاکستان کی سابقہ خاتون اول انتقال کرگئیں

سکندر مرزا اور ناہید اسکندر مرزا 1954ء میں رشتۂ ازدواج میں منسلک ہوئے تھے۔

پاکستان کے پہلے صدر اسکندر مرزا کی بیوہ ناہید اسکندر مرزا لندن میں انتقال کر گئیں۔ پاکستانی دفتر خارجہ کے ترجمان نے اُن کے انتقال کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ وہ طویل عرصے سے علیل تھیں اور لندن کے اسپتال میں زیر علاج تھیں۔ مسز ناہید اسکندر مرزا، سابق صدر کی دُوسری اہلیہ اور ایرانی کُرد تھیں۔

اسکندر مرزا پاکستان کے تیسرے گورنر جنرل تھے تاہم اُن کے دور میں آئین ساز اسمبلی کی جانب سے پاکستان کا پہلا آئین 1956ء میں تشکیل پایا جس کے مطابق گورنر جنرل کا عہدہ صدر سے بدل دیا گیا۔ اور یوں میجر جنرل اسکندر مرزا پاکستان کی تاریخ کی وہ واحد شخصیت ہیں جو گورنر جنرل ہونے کے ساتھ ساتھ صدر بھی بنے۔

سکندر مرزا اور ناہید اسکندر مرزا 1954ء میں رشتۂ ازدواج میں منسلک ہوئے تھے۔ اسکندر مرزا کا بعد میں انتقال ہو گیا تاہم اُن کی دُوسری اہلیہ اُن کی موت کے بعد طویل عرصہ تک حیات رہیں، جو لندن کے ایک اسپتال میں طویل عرصہ بیماری کا شکار رہ کر انتقال کر گئیں۔


ناہید اسکندر مرزا پیپلز پارٹی کے بانی اور پاکستان کے سابق وزیر اعظم ذوالفقار علی بھٹو کی اہلیہ بیگم نصرت بھٹو کی بھی رشتہ دار تھیں۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎