عمران خان تبدیلی لےآئے،پاکستان کا تجارتی خسارہ کم ہوکرکتنارہ گیا ؟ادارہ برائے شماریات نے قوم کو خوشخبری سنا دی

 رواں مالی سال 2018-19ء کی پہلی ششماہی میں ملک کے تجارتی خسارے میں 5.07 فیصد کمی واقع ہوئی ہے۔


جولائی تا دسمبر 2018ء کے دوران قومی برآمدات میں 2.19 فیصد اضافہ ہوا۔ ادارہ برائے شماریات پاکستان(پی بی ایس) کی رپورٹ کی معلومات کے مطابق گزشتہ مالی سال کےمقابلہ میں جاری مالی سال کی پہلی ششماہی میں جولائی تا دسمبر 2018ء کے دوران قومی برآمدات میں 2.19 فیصد اضافہ جبکہ درآمدات میں 2.29 فیصد کی کے نتیجہ میں تجارتی خسارہ میں 5 فیصد سے زائد کمی ہوئی ہے۔ رپورٹ کی معلومات کے مطابق جولائی تا دسمبر 2017ء کے دوران برآمدات کا حجم 10 ارب 97 کروڑ 60 لاکھ ڈالر تھا۔

جوجولائی تا دسمبر 2018ء کے دوران 11 ارب21 کروڑ 60 لاکھ ڈالر تک بڑھ گیا اس طرح برآمدات میں 2.19 فیصد اضافہ ہوا ہے جبکہ دوسری جانب قومی رآمدات گزشتہ مالی سال کی پہلی ششماہی میں 28 ارب 69 کروڑ 50 لاکھ ڈالر تھیں جو جاری مالی سال میں جولائی تا دسمبر 2018ء کے دوران 28 ارب 3 کروڑ 70 لاکھ ڈالر تک کم ہو گئیں۔

ملکی برآمدات میں اضافہ اور درآمدات میں کمی کے نتیجہ میں تجارتی خسارہ بھی جولائی تا دسمبر 2017ء کے دوران 17 ارب 71 کروڑ 90 لاکھ ڈالر کے مقابلے میں جاری مالی سال میں جولائی تا دسمبر 2018ء کے دوران 16 ارب 82 کروڑ 10 لاکھ ڈالر تک کم ہو گیا جس سے قومی خزانے پر ادائیگیوں کے توازن کا بوجھ کم ہوا ہے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎