وزیراعظم نے صحت کارڈ کے پہلے مرحلے کا آغاز کردیا،غربت ختم کرنےکےلیےعمران خان نےایک اورشاندارمنصوبے کااعلان کردیا

 وزیراعظم عمران خان نے صحت کارڈ کے پہلے مرحلے کا آغاز کردیا ۔ انہوں نے کہا کہ ہیلتھ کارڈ کا اجراء خوش آئند ہے، غربت میں کمی آئے گی، ملکی تاریخ میں پہلی بار غربت ختم کرنے کیلئے پروگرام لا رہے ہیں، تمام خیراتی اداروں کوایک چھتری تلے جمع کریں گے،برآمدات میں کمی سے روپے کی قدر35 فیصد گری، مہنگائی توآنی ہی تھی، عوام کیلئے جلد آسانیاں پیدا کی جائیں گی۔


وزیراعظم عمران خان نے آج اسلام آباد میں ہیلتھ کارڈ اجراء کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہیلتھ کارڈ کا اجراء خوش آئند ہے۔خیبرپختونخواہ میں ہم نے ہیلتھ کارڈ فراہم کیے۔انہوں نے کہا کہ گھر میں اگر کوئی بیمار ہو توگھر کا سارا بجٹ متاثر ہوجا تا تھا۔ لیکن اب ایسا نہیں ہوگا، بلکہ اس بھی غربت کم ہونے میں مدد ملے گی۔

انہوں نے کہا کہ مجھے کینسر کی بیماری کا تب پتا چلا جب میری والدہ کو بیماری ہوئی۔

ملک میں ہسپتال ہی نہیں تھا۔ایک غریب گھرانے میں کینسر ہوتی تھی توغیرب گھرانے اپنا سب کچھ فروخت کردیتے تھے۔میں نے ان دنوں میں ایسے ایسے واقعات دیکھے کہ وہ تکلیف میں اپنا سب کچھ بیچ دیتے تھے۔ سونا اور جمع پونجی سب بیچ دیتے تھے۔وزیراعظم نے کہا کہ انہوں نے کہا کہ اس سے بڑا بے بس انسان کون ہوسکتا ہے؟جس کو بیماری ہواور اس گھر میں پیسے نہ ہوں۔

ہماری تمام پالیسیاں غریبوں کیلئے ہوں گی۔ٹیکسٹائل ، انڈسٹریز کو ریلیف دے رہے ہیں تواس کا ایک ذریعہ غربت کا خاتمہ بھی ہے۔ہماری ہرپالیسی کا محورغربت کا خاتمہ ہے۔ہیلتھ کارڈ سے بھی غربت کم ہوگی۔ جو لوگ مشکل سے اخراجات پورے کررہے ہیں ان کوآسانی پیدا ہوجائے گی۔قبائلی علاقوں کے تمام خاندانوں کو ہیلتھ کارڈ فراہم کریں گے۔ تاکہ جب تک وہاں ترقی نہیں ہوتی ان کے پاس ہیلتھ کارڈ موجود ہوں، اور وہ اپنا مفت علاج کروا سکیں۔

ہیلتھ کارڈ سے غریب طبقے کا 7لاکھ 20ہزار خرچ کرسکتے ہیں۔عمران خان نے کہا کہ ملکی تاریخ میں پہلی بار غربت میں کمی کے پروگرام لا رہے ہیں۔خیراتی ادارے ،بیت المال، این جی اوز،سب کو ایک ہی چھتری تلے جمع کریں گے۔اس پروگرام سے غربت ختم کرنے میں مدد ملے گی۔انہوں نے کہا کہ امپورٹ اور ایکسپورٹ میں کمی سے روپے کی قدر35فیصد گر گئی، جب روپیہ 35فیصد گرا تومہنگائی توآنی ہی تھی۔گیس اور بجلی کی قیمت بڑھ گئی۔جس سے مہنگائی بڑھ گئی، کوشش ہے عوام کیلئے آسانیاں پیدا کریں۔بنگلا دیش اور سری لنکا بھی ہم سے پیچھے تھے۔ بھارت ہم سے پیچھے تھا لیکن اب بہتری آئے گی۔ سرمایہ کار پاکستان آنا شروع ہوگئے ہیں۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎