حکومت کو ٹف ٹائم دینے کیلئے مسلم لیگ (ن) نے حتمی فیصلہ کرلیا

(ن) لیگ نے نواز شریف کیخلاف فیصلہ آنے پر حکومت مخالف احتجاج کا اعلان کیا تھا تاہم پارٹی نے احتجاج کی حکمت عملی تبدیل کرتے ہوئے پارلیمنٹ اور صوبائی اسمبلیوں میں حکومت کو ٹف ٹائم دینے کا فیصلہ کر لیا ہے.


 مسلم لیگ ن کے پار ٹی ذرائع کے مطابق مولانا فضل الرحمن نے بھی مسلم لیگ ن اور پیپلزپارٹی کو قریب لانے کی کوشش کی تاہم وہ کامیاب نہ ہو سکے.

تاہم اب مسلم لیگ ن کے قائد محمد نواز شریف نے پارٹی رہنماؤں کو 11جنوری کو شروع ہونے والے قومی اسمبلی کے 7ویں سیشن میں حکومت کو ٹف ٹائم دینے کی ہدایت کی ہے.

جمعرات کو میاں نواز شریف سے ملاقات کرنے والے ایک رہنما نے نجی ٹی وی کو بتایا کہ میاں نواز شریف کا مورال بلند ہے اور وہ پارٹی امور کے بارے میں گہری دلچسپی لے رہے ہیں۔

اڈیالہ جیل کے مقابلے میں لاہور کی جیل میں نواز شریف خاصے مطمئن ہیں کیونکہ وہاں ان کے اہلخانہ باآسانی ملاقات کرسکتے ہیں۔

 انہوں نے بتایا کہ میاں نواز شریف، جیل میں سیاسی کتب کا مطالعہ کررہے ہیں۔ میاں نواز شریف نے جیل کی تکالیف کا کوئی ذکر نہیں کیا۔

انہوں نے بتایا کہ پارٹی کی سنٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس رواں ماہ میں طلب کیا جائے گا جس میں آئندہ لائحہ عمل تیار کیا جائے گا۔ 



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎