ن لیگ نے نواز شریف کی گرفتاری کی صورت میں حکمت عملی تیارکرلی

24 دسمبر کو احتساب عدالت کے فیصلے سے پہلےمسلم لیگ ن کے اجلاس میں اہم فیصلے کرلیے گئے، نوازشریف نے 23مارچ تک مسلم لیگ ن کی تنظیم سازی مکمل کرنےکی ہدا یت کردی۔

مسلم لیگ ن کی اعلیٰ قیادت کا پارلیمنٹ ہاؤس میں اجلاس ہوا جس میں احتساب عدالت کے فیصلے اور موجودہ سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔


ذرائع کے مطابق اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ نوازشریف کیخلاف فیصلےکی صورت میں پارٹی معاملات ن لیگ کاایڈوائزری بورڈ دیکھےگا ، ایڈوائزری بورڈ کل تک تشکیل دے دیا جائیگا جس میں پارٹی کےقومی اسمبلی اورسینیٹ کےمرکزی رہنما شامل ہونگے۔

ذرائع کے مطابق نوازشریف نے 23مارچ تک پارٹی کی تنظیم سازی مکمل کر نے اور سوشل میڈیا کو متحرک کرنے کی ہدایت کر دی۔

اجلاس کے دوران مریم اورنگزیب کی سربراہی میں ایک کمیٹی تشکیل دی گئی جو میڈیا سے رابطہ رکھنے کے علاوہ حکومت کی جانب سے سوشل میڈیا پر کیے جانے والے پروپیگنڈے کا جواب دے گی۔

یاد رہے کہ اسلام آباد کی احتساب عدالت نے گزشتہ روز نواز شریف کے خلاف العزیزیہ اور فلیگ شپ ریفرنسز پر فیصلے محفوظ کیے جو 24 دسمبر کو سنائے جائیں گے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ شریف برادران نے احتساب عدالت کا فیصلہ حق میں آنے کی صورت میں خاموش رہنے جبکہ خلاف آنے پر عوامی رابطہ مہم چلانے پر اتفاق کیا۔مسلم لیگ نون کے قائد نوازشریف اور پارٹی صدر شہبازشریف کےدرمیان ون آن ون ملاقات بھی ہوئی ہے۔

جس میں دونوں بھائیوں میں احتساب عدالت کے متوقع فیصلے کے حوالے سے گفتگو ہوئی، دونوں نے آپس میں مشاورت کی اور دیگر امور پر تبادلہ خیال کیا۔

دونوں رہنما ایک دوسرے سے چلتے چلتے سرگوشیوں میں بھی باتیں کرتے رہے اوربات چیت کے دوران زیادہ تر بات نوازشریف نے ہی کی جبکہ شہباز شریف خاموشی سے نواز شریف کی بات سنتے رہے.



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎