پیراگون ہاؤسنگ اسکینڈل کیس، خواجہ برادران کی مشکلات کم نہ ہوسکیں،عدالت نے بڑا حکم جاری کردیا

لاہور کی احتساب عدالت نے پیراگون ہاؤسنگ اسکینڈل کیس میں خواجہ برادران کا مزید سات روز کے لیے جسمانی ریمانڈ منظور کرتے ہوئے انہیں 26 جنوری کو پیش کرنے کا حکم دے دیا۔


احتساب عدالت میں پیراگون ہاؤسنگ اسکینڈل کیس کی سماعت ہوئی جس کے دوران عدالت نےخواجہ برادران خواجہ سعد رفیق اور خواجہ سلمان رفیق کو 26 جنوری کو پیش کرنے کا حکم دے دیا۔

دورانِ سماعت نیب کے وکیل نے عدالت سے استدعا کی کہ بینک اکاؤنٹس سے متعلق تفتیش مکمل کرنے کے لیے ملزمان کا مزید جسمانی ریمانڈ دیا جائے۔

خواجہ سعد رفیق کے وکیل نے کہا کہ ابھی تک تفتیش میں کوئی پیش رفت نہیں ہوئی، پیراگون سے خواجہ برادران کا کوئی تعلق نہیں، اس لیے جسمانی ریمانڈ کی ضرورت نہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ نیب کے پاس خواجہ سعد رفیق کا کوئی اکاؤنٹ نہیں ہے کہ جس کی تفتیش کرنی ہو، پیراگون سمیت جو بھی لین دین ہوئی اس کا ریکارڈ موجود ہے۔

عدالت نے نیب کے وکیل کی استدعا منظور کرتے ہوئے خواجہ برادران کا 7 روز کا جسمانی ریمانڈ دے دیا۔

لاہور کی احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پر صحافیوں سے گفت گومیں خواجہ سلمان نےکہا کہ حکومت کی نااہلی سامنے آگئی ،بڑے بڑے وعدے پورے نہیں کیے جارہے، پی ٹی آئی کی حکومت کی حقیقت پانچ ماہ میں ہی سامنےآگئی ۔

انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کا اکٹھا ہونا خوش آئند ہے، اپوزیشن جتنی مضبوط ہو گی حکومت پر اتنا ہی دباؤ پڑےگااور کام کرےگی ،عمران خان صرف انتقام کی سیاست کر رہے ہیں، ان کا اپنے مخالفین کو گرفتار کرانےپر زور ہے 



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎