تبدیلی سرکار چیف جسٹس کے نشانے پر، کھری کھری سنا دی

چیف جسٹس ثاقب نثار نے وزیر آبی وسائل سے کہا مہمند ڈیم سے متعلق آپ نے تاریخ تبدیل کردی اور اتنا بھی مناسب نہیں سمجھا کہ چیف جسٹس کو ہی بتا دیا جاتا۔


ڈیموں کی تعمیر کے حوالے سے چیف جسٹس ثاقب نثار تبدیلی سرکار پر برہم ہوگئے، سنگ بنیاد کی تاریخ تبدیل کرنے پر بولے کہ اتنا بھی مناسب نہیں سمجھا کہ ہمیں بتا ہی دیتے، وفاقی وزیر فیصل واؤڈا نے معافی مانگ لی۔

مہمند ڈیم کا سنگ بنیاد رکھنے کے معاملے پر چیف جسٹس پاکستان وفاقی حکومت سے ناراض ہوگئے، فیصل واؤڈا کی کھنچائی کردی، وفاقی وزیر نے حکومت کی طرف سے معافی مانگ لی۔

عدالت کو چیئرمین واپڈا نے بتایا مہمند ڈیم کا سنگ بنیاد اتوار 13 جنوری کو رکھا جائے گا اور دیامر بھاشا کا کام جولائی میں شروع کیا جائے گا۔

فیصل واؤڈا نے کہا کہ حکومت کی طرف سے معافی مانگتا ہوں مگر چیف جسٹس نے اس پر بھی ناگواری کا اظہار کیا۔ بولے کہ ہوسکتا ہے کہ اب اس ڈیم کی گراؤنڈ بریکنگ میں شامل ہی نہ ہوں۔

جسٹس ثاقب نثار مزید بولے ہم نے معاملہ شائد اس وقت اٹھایا جب نااہل لوگ تھے اور اب حکومت میں قابل لوگ آگئے ہیں، وہ خود ہی سب کرلیں گے۔

ساتھ ہی چیف جسٹس نے سوال اٹھایا سنگ بنیاد کی تاریخ بدلنے کے علاوہ اور کیا کام کیا؟، فنڈز سے متعلق پیشرفت بھی پوچھ لی، بولے صرف اتنا اعلان کردیا گیا کہ 2025ء میں پانی نہیں ہوگا۔

وزیر اعظم کو چیف جسٹس کی ناراضگی سے فیصل واؤڈا نے آگاہ کردیا۔ یہ بھی بتا دیا وہ تقریب میں شرکت کیلئے آمادہ نہیں، جس پر وزیر اعظم نے فیصلہ سنا دیا کہ تقریب کا انعقاد چیف جسٹس کی آمادگی تک ملتوی کردیا جائے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎