علیم خان کا استعفیٰ آتے ہی تحریک انصاف میں سینئیر وزیرکی کرسی کے لیے دوڑ شروع ہو گئی، بڑے ناموں نے زور لگانا شروع کردیا

گرفتاری کے فوری بعد علیم خان نے وزارت سے استعفیٰ دے دیا ۔جس کے بعد صوبائی کابینہ میں سینئیر صوبائی وزیر کی نشست خالی ہو چکی ہے۔


سینئیر وزیر کی کرسی کے لیے راجہ بشارت،سبطین خان اور میاں محمود الرشید امیدوار ہیں۔ تفصیلات کے مطابق نیب لاہور سینئر وزیر پنجاب علیم خان کے خلاف بیرون ملک جائیداد، آمدن سے زائد اثاثوں اور آف شور کمپنی کے حوالے سے تفتیش کررہا ہے، وہ آخری مرتبہ 8 اگست کو نیب کے سامنے پیش ہوئے جس کے بعد انہیں ایک سوالنامہ دیا گیا اور 6 فروری کو طلب کیا گیا تھا۔

اس سلسلے میں علیم خان چوتھی بار پیش کرنے کے لئے پونے گیارہ بجے کے قریب ٹھوکرنیاز بیگ پر موجود نیب کے دفتر پہنچے جہاں میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ آج جس حوالے سے طلب کیا گیا اس پر واپسی پر بات کروں گا۔

 تحریک انصاف میں سینئر وزارت اور بلدیات کے حصول کے لیے کوششوں کا آغاز ہو چکا ہے۔بشارت راجہ، سبطین خان اور محمود الرشید پنجاب کے سینئر وزیر بننے کی خواہش رکھتے ہیں تاہم سینئیر وزیر کا عہدہ کسے ملے گا اس بات کا حتمی فیصلہ وزیر اعظم عمران خان کریں گے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎