سانحہ ساہیوال: ن لیگ نے حکومت سے بڑا مطالبہ کر دیا

قومی اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے صدر اور سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے کہا کہ سانحہ ساہیوال پر سیاست کریں گے اور نہ ہی دھرنا دیں گے، حقائق آنے تک حکومت کو چین نہیں لینے دیں گے۔


اپوزیشن لیڈر نے سانحہ ساہیوال کی تحقیقات کیلئے پارلیمانی کمیٹی بنانے کا مطالبہ کردیا۔ شہباز شریف کہتے ہیں معاملے پر دھرنا نہیں دیں گے لیکن حقائق سامنے آنے تک حکومت کو چین نہیں لینے دیں گے، عوام جاننا چاہتے ہیں کہ بدترین سفاکیت کا مظاہرہ کیوں کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ ساہیوال واقعے پر وزیراعظم نے جواب دینا ہے، وزیراعلیٰ پنجاب اور وزیر داخلہ کو بھی جواب دینا ہوگا، سی ٹی ڈی کے اہلکار بھی وردی میں نہیں تھے، عوام جاننا چاہتے ہیں یہ ظلم کیوں ہوا؟ جھوٹ کیوں بولا گیا؟۔

تحقیقات کیلئے پارلیمانی کمیٹی بنانے کا مطالبہ کرتے ہوئے قائد حزب اختلاف بولے کہ پنجاب حکومت نے قلابازیاں کیوں کھائیں، معصوم بچے نے اہلکاروں کے جھوٹ کا پول کھول دیا، 22 کروڑ عوام معصوم بچوں کی حفاظت کریں گے۔

دوسری جانب سانحہ ساہیوال پر بحث کے دوران تقریر کرتے ہوئے خواجہ آصف نے کہا کہ اگر بس والے نے ویڈیو نہ بنائی ہوتی تو پھر سانحہ ساہیوال کور ہوچکا تھا، نہتے افراد کو ان کے بچوں کے سامنے گولیاں ماری گئیں اور پھر جھوٹ پر جھوٹ بولا گیا۔

وہ بولے کہ راﺅ انوار آج بھی دندناتا پھرتا ہے، یہاں قانون وزیراعظم کیخلاف حرکت میں آسکتا ہے لیکن اس شخص کیخلاف نہیں جس نے مقابلوں میں بے گناہ لوگ مارے ہوں۔

مسلم لیگ ن کے رہنماء کا کہنا تھا کہ جہاں ظلم ہو وہ معاشرہ مٹ جاتا ہے، کہا گیا کہ بچوں کو ہیومن ڈھال بنایا گیا تھا، اس سے گھٹیا پن کوئی ہوسکتا ہے، دہشتگردی ختم کرنیوالے خود دہشت گرد بن گئے ہیں جو لوگ جاں بحق ہوئے وہ دہشت گرد نہیں تھے بلکہ جن لوگوں نے مارا ہے، وہ دہشت گرد ہیں۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎