سعودی عرب نے پاکستان کیساتھ دوستی کی نئی مثال قائم کردی

 سعودی ولی عہد کا دورہ پاکستان ایک غیرمعمولی دورہ ہے جس کے بعد نئے اسٹریٹجک دورکا آغاز ہوگا۔


سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے دورہ پاکستان کی تیاریاں آخری مراحل میں داخل ہو رہی ہیں۔ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے شاہی دورے کے لیے 300 پراڈو گاڑیوں کا انتظام مکمل کر لیا گیا ہے، ولی عہد کے استعمال کے لیے گاڑیاں سعودی عرب سے لائی جائیں گی۔

سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے دورہ پاکستان کے موقع پر سعودی سفارتخانے نے پاکستان اور سعودی عرب کی دوستی اور مضبوط آپسی تعلقات کے اظہار کے لیے قلم اور کپ جاری کیے۔ اس حوالے سے سینئیر صحافی نے مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر ایک تصویر بھی جاری کی اور ساتھ ہی پیغام میں لکھا کہ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کے دورہ پاکستان کےموقع پرسعودی سفارتخانے نے Long Live Saudi Pak Friendship کے جاندار اظہار کے لیے قلم اور کپ جاری کئے جن پر پاکستان اور سعودی عرب کے قومی پرچموں کو یک جان ظاہر کیا گیا ہے۔

ٹویٹر صارفین کا کہنا تھا کہ پاکستان کو خدا خدا کر کے عمران خان جیسا ایک لیڈر نصیب ہوا ہے۔ اب انشاءاللّه پاکستان جلد ترقی یافتہ ممالک کی فہرست میں شامل ہو جائے گا

سعودی آرمی، اسلامی فوجی اتحاد کے 235 اراکین پر مشتمل دستہ پاکستان پہنچ گیا ہے، سعودی ولی عہد کے ساتھ 130 شاہی گارڈز بھی ساتھ ہوں گے۔ ذرائع کے مطابق سعودی ولی عہد کے دورہ پاکستان کے دوران 15 سے 20 ارب ڈالرز کے معاہدوں پر دستخط ہوں گے، منصوبوں میں آئل ریفائنری، کے پی، پنجاب سیاحت کے ہوٹلز کی تعمیر، توانائی پراجیکٹس شامل ہیں، حویلی بہادر شاہ ، بھکی پاور پلانٹ میں سعودی سرمایہ کا ری کا امکان ہے۔

سعودی ولی عہد محمد بن سلمان 16 فروری کو پاکستان پہنچیں گے



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎