ڈالر کی قدر میں استحکام وقتی ثابت ہوسکتا ہے

ڈالر کی قدر 2 ہفتے سے139 روپے پر ہے۔ ماہرین کا کہنا ہےکہ یہ ٹہراؤ وقتی ثابت ہوسکتا ہے اور آنے والے ماہ میں یہ مزید گرسکتا ہے۔


پچھلے برس نومبر کے مہینے میں ڈالر کی قیمت 140 روپے سے تجاوز کرنے کے بعد کھلبلی مچ گئی تھی۔ تاہم غیرملکی امداد آنے کے بعد ڈالر کی قیمت میں قدرے ٹہراؤ آیا اور دو ہفتے سے ڈالر کی قیمت 139 روپے سے 140 روپے کے درمیان رہی۔

پچھلے برس 5 مرتبہ ڈالر کی قیمت میں 4 روپے یا زائد کا اضافہ دیکھنے میں آیا اور صرف ایک بار ڈالر کی قدر میں 4 روپے کی کمی ہوئی۔ مجموعی طور پر ڈالر کی قیمت میں 27 فیصد اضافہ ہوا ۔ صرف ڈیڑھ ماہ میں ڈالر کی قیمت دو بار سب سے زیادہ سطح پر گئی ۔

نومبر کی 30 تاریخ کو ڈالر کی قیمت میں ساڑھے 9 روپے اضافہ ہوا اور اس کی قدر انٹر بینک میں 143.5 روپے تک بلند ہوگئی۔ تاہم اس روز ہی ڈالر 140.3 روپے پر آگیا۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎