وزیرقانون پنجاب راجہ بشارت نے تبدیلی کے پرخچے اڑا دئیے

وزیرقانون پنجاب راجہ بشارت کی جانب سے لیگی رہنما حنیف عباسی کی بیٹی کا تبادلہ کرانے کےلئے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ بینظیربھٹواسپتال کو کی جانے والی آڈیو کال منظرعام پرآگئی۔ کال لیک ہونے کے بعد ڈاکٹر اریبہ عباسی نے تحفطات کا اظہار کرتے ہوئے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔


راجا بشارت اور ایم ایس ڈاکٹرطارق نیازی کے درمیان آڈیوکال میں وزیر قانون پنجاب م ڈاکٹراریبہ کے تبادلے کی سفارش کرتے ہوئے کہہ رہے ہیں کہ ہم نہیں چاہتے کہ ہم پرسیاسی انتقام کا نشانہ بنائے جانے کا الزام لگے۔ سیاسی اختلافات اپنی جگہ لیکن بچے سب کے سانجھے ہوتے ہیں۔ حنیف عباسی ہمارے بھائی ہیں۔ اریبہ میرے بچوں کی طرح ہے ، آپ اسے اسکن ڈیپارٹمنٹ میں بھجوا دیں۔

جس پر ڈاکٹرطارق نیازی نے ڈاکٹراریبہ کا ڈیپارٹمنٹ تبدیل کرنے سے انکارکرتے ہوئے کہا میں ایسا نہیں کرسکتا۔

وزیرقانون پنجاب نے جواب دیا کہ کیوں نہیں بھیج سکتے، اگر نہیں تو اپنے تبادلے کے لیے تیاررہیں، ڈاکٹر طارق نیازی بولے کہ کوئی مسئلہ ہی نہیں، موسٹ ویلکم ۔

آڈیوکال سامنے آنے کے بعد ڈاکٹر اریبہ عباسی نے استعفیٰ دے دیا۔ سیکریٹری صحت پنجاب کو بھیجے گئے استعفے میں انہوں نے ایم ایس بینظیربھٹو اسپتال ڈاکٹرطارق نیازی پر پی ٹی آئی سے روابط کا الزام عائد کرتے ہوئے لکھا کہ ڈاکٹرطارق نیازی ان کے خلاف انتقامی کارروائی کررہے ہیں۔

استعفیٰ میں ڈاکٹر اریبہ عباسی کی جانب سے لکھا گیا ہے کہ وہ 13 ستمبر2017 کو بینظیر بھٹو اسپتال میں بطور میڈیکل افسر تعینات ہوئیں، 2 ماہ ایمرجنسی میں کام کرنے کے بعد انہیں پیتھالوجی ڈیپارٹمنٹ میں بھیجا گیا جہاں سے 3 ماہ بعد ان کا تبادلہ اسکن ڈیپارٹمنٹ میں کردیا گیا۔ پوری دلجمعی سے کام کر رہی تھیں کہ 4 دسمبر کو ڈاکٹر طارق نیازی کی جانب سے صرف ان کے ٹرانسفرکا لیٹر ایشو کرتے ہوئے انہیں ایمرجنسی میں تعینات کردیا گیا۔ درخواست کرنے کے باوجود طارق نیازی نے انہیں اسکن ڈیپارٹمنٹ میں ہی رکھنے سے انکار کردیا جبکہ وہ پوری محنت اور لگن سے کام کر رہی تھیں۔

ڈاکٹر اریبہ عباسی نے مزید کہا کہ میڈیکل سپرنٹنڈنٹ طارق نیازی پہلے دن سے ہی میرے والد حنیف عباسی کی وجہ سے انتقامی کارروائی کا نشانہ بنا رہے ہیں، ایسی صورت میں میرے کیرئیر کیلئے یہی بہتر ہے کہ میں ان کی سپرویژن میں کام نہ کروں اور استعفیٰ دے دوں۔

دونوں جانب کا موقف سامنے آگیا لیکن اصل حقائق کاعلم تحقیقات کے بعد لگایا جا سکے گا۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎