مستقبل میں قیادت کا حقدار کون؟حمزہ شہباز یا مریم نواز، لیگی کارکنان نے قیادت کو واضح پیغام دے دیا

نواز شریف اور شریف خاندان کے افراد سے اظہار یکجہتی کیلئے کارکنوں کی بڑی تعداد صبح سویرے سے ہی جیل کے باہر اکٹھے ہونا شروع ہو گئے جو وقفے وقفے سے اپنی قیادت کے حق میں نعرے لگاتے رہے ۔


کوٹ لکھپت جیل پہنچنے پر کارکنان نے مریم نواز کو نظر انداز کر دیا،حمزہ شہباز کا شاندار استقبال کرکے کارکنان نے قیادت کو واضح پیغام دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزر یر اعظم محمد نوازشریف سے کوٹ لکھپت جیل میں ان کی والدہ بیگم شمیم اختر ،بیٹی مریم نواز ،داماد کیپٹن (ر) محمد صفدر، بھتیجے حمزہ شہباز سمیت خاندان کے دیگر افراد اور بیشتر لیگی رہنماوں نے ملاقات کی۔

 ذرائع کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ نواز شریف نے مریم نواز ،حمزہ شہباز اور پارٹی کے مرکزی رہنمائوں سے ہونے والی ملاقاتوں میں ملک کی مجموعی صورتحال پر بھی گفتگو کی جبکہ رہنمائوںنے بعض امور پر ان سے رہنمائی بھی حاصل کی ۔

نواز شریف اور شریف خاندان کے افراد سے اظہار یکجہتی کیلئے کارکنوں کی بڑی تعداد صبح سویرے سے ہی جیل کے باہر اکٹھے ہونا شروع ہو گئے جو وقفے وقفے سے اپنی قیادت کے حق میں نعرے لگاتے رہے ۔اس موقع پر جب حمزہ شہباز کی گاڑی کوٹ کھپت پہنچی تو کارکنان کی جانب سے پرتپاک استقبال کیا گیا اور انکی گاڑی پر پھولوں کی پتیاں نچھاور کی گئیں لیکن جیسے ہی مریم نواز کی گاڑی آئی تو کارکنان کی جانب سے اس جوش و خروش کا مظاہرہ نہ کیا گیا اور نہ ہی انکی گاڑی پر پھولوں کی پتیاں نچھاور کی گئیں۔کارکنان کی جانب سے سرد مہری کو خاموش پیغام بھی قرار دیا جارہا ہے۔



آپ کیلئے تجویز کردہ خبریں‎‎